اعلی درجے کی تلاش
کا
6681
ظاہر کرنے کی تاریخ: 2011/05/21
 
سائٹ کے کوڈ fa5890 کوڈ پرائیویسی سٹیٹمنٹ 14184
سوال کا خلاصہ
جس عورت نے حائض هونے کے گمان سے استحاضه کے دوران نمازیں نهیں پڑھی هیں اس کا فریضه کیا هے؟
سوال
اگر کسی عورت کی عادت سات دن هو لیکن وه استثنائی طور پر دس دن تک خون دیکھے تو اسے آٹھویں دن کے بعد بجا نهیں لائی گئی نمازوں کی قضا بجا لانی چاهئیے، سوال یه هے که :
۱لف: اس فرضیه پر که اس کا استحاضه متوسطه هو تو کیا آٹھویں دن کے بعد نه پڑھی گئی نمازوں کو بجا لانے کے لیے اسے غسل کرنا ضروری هے؟
ب: اگر پاک هونے کے بعد استحاضه کے دوران قضا هوئی نمازوں کو بجا لانا چاهے، تو کیا غسل کو بھی قضا کے طور پر بجا لانا چاهئیے؟
ج: اس کے پیش نظر که استحاضه متوسطه کے شروع هونے کے بعد والی نماز سے پهلے غسل کرنا چاهئیے، کیا استحاضه شروع هونے کا زمانه ساتویں دن کی نماز مغرب و عشا سے پهلے حساب کرنا چاهئیے یا آٹھویں دن کی نماز صبح سے پهلے حساب کرنا چاهئیے؟ {جبکه اس کی سات روزه عادت دونوں مواقع پر ممکن هو، یعنی اس کے خاتمے کی مدت معلوم نه هو که نماز مغرب سے پهلے تھی یا نماز صبح سے پهلے۔}
د: اگر اس نے خیال کیا که استحاضه کثیره هے اور اسی نیت سے غسل کیا هو اور بعد میں معلوم هو جائے که استحاضه قلیله تھا، تو کیا وه غسل، استحاضه قلیله کے زمانه کے واجب غسل کے لیے کافی هے؟
دیگر زبانوں میں (ق) ترجمہ
تبصرے
تبصرے کی تعداد 0
براہ مہربانی قیمت درج کریں
مثال کے طور پر : Yourname@YourDomane.ext
براہ مہربانی قیمت درج کریں
براہ مہربانی قیمت درج کریں

زمرہ جات

بے ترتیب سوالات

ڈاؤن لوڈ، اتارنا