اعلی درجے کی تلاش
کا
3834
ظاہر کرنے کی تاریخ: 2009/04/06
 
سائٹ کے کوڈ fa1693 کوڈ پرائیویسی سٹیٹمنٹ 4573
سوال کا خلاصہ
سال کے آخر پر بچى استعمال کى چیزوں پر خمس کا کیسے حساب کیا جا سکتا هے ؟
سوال
کیا استعمال تمام چیزوں جیسے : روٹى اور اجناس وغیره پر سال کے آخر پر خمس دنیا ضرورى هے؟ ان کى قیمت کا کیسے حساب کیا جاسکتا هے ؟ کیا ان چیزوں پر بھى خمس دینا ضرورى هے جو مالى سال کے آخر پر روز مره اخراجات کے لئے خریدى جاتى هیں؟ (میں مقام معظم رهبرى کا مقلد هوں)
ایک مختصر

مقام معظم رهبرى نے اسى سلسله میں کئے گئے ایک سوال کے جواب میں فرمایا هے : " روزمره اخراجات کى چیزوں ، جیسے چاول، تیل وغیره، میں سے اگر کوئى چیز خمس کے سال تک باقى بچے تو اس پر خمس دینا هے ـ "[1]

چونکه خمس عین اجناس سے متعلق هے، مثلاً اگر خمس کے سال پر پانچ کلو چاول باقى بچے تو ان میں سے ایک کلو چاول خمس دینا هے، یا وهى ایک کلو چاول دینا چاهئے یا رائج الوقت      قیمت کے مطابق مرجع تقلید کے دفتر میں اس کے پیسے ادا کرنے چاهئے ـ

لیکن خریدارى کے زمانه کے لحاظ سے اول سال یا آخر سال میں کوئى فرق نهیں هے، کیونکه اگر آپ نے سال کے آخرى وقت میں کوئى چیز خریدى هو اور سال خمس کے آخر تک باقى بچى هو تو اس پر خمس ادا کرنا هے اور اگر یه چیز نه خریدی هو تو قطعاً اس کے پیسے آپ کے پاس موجود هیں، اس لئے ان بیسوں کا خمس ادا کرنا ضرورى هے ـ



[1]  توضیح المسائل (المحشى للامام الخمینى)، ج 2، ص 79 س 912.

دیگر زبانوں میں (ق) ترجمہ
تبصرے
تبصرے کی تعداد 0
براہ مہربانی قیمت درج کریں
مثال کے طور پر : Yourname@YourDomane.ext
براہ مہربانی قیمت درج کریں
<< مجھے کھینچ کر لائیں.
سیکورٹی کوڈ از صحیح رقم درج کریں

زمرہ جات

بے ترتیب سوالات

ڈاؤن لوڈ، اتارنا